پروفیسر ڈاکٹر ابو الخیر کشفی اور پروفیسر ڈاکٹر سردار احمد خان

زندگی بہر حال فانی ہے۔ ہر کسی
کو موت آنی ہے، مگر جب کسی عالم کی موت واقع ہو تو ایسی موت عالم کی موت
گردانی جاتی ہے … پچھلے دنوں ایسے ہی دو عالموں کی موت واقع ہوئی جو علم و
ادب اور اخلاق و شرافت کے افق پر روشن ستارے کی مانند تھے۔ ایک پروفیسر
ڈاکٹر ابو الخیر کشفی تو دوسرے پروفیسر ڈاکٹر سردار احمد خان۔ دونوں حضرات
میں چند باتیں قدرے مشترک تھیں یعنی دونوں اردو ادب کے استاد، محقق، ادیب،
شاعر، تنقید نگار اور ماہر تعلیم، دونوں کا درس و تدریس کے شعبہ سے تعلق
رہا۔ دونوں ایک ہی استاد گرامی ڈاکٹر غلام مصطفیٰ خان (مرحوم) کے فیض علم
سے بہرہ مند تھے۔ آخری وقت میں دونوں ایک ہی اسپتال میں (نیشنل میڈیکل
سینٹر ڈیفنس) میں زیر علاج رہے۔ دونوں کا انتقال وہیں ہوا۔ دونوں کی آخری
آرام گاہ ایک ہی جگہ (ڈیفنس قبرستان) قرار پائی۔ دونوں کا انتقال ایک ہی
سال، ایک ہی ماہ بلکہ ایک ہی ہفتہ میں ایک دن کے وقفے سے آگے پیچھے ہوا
یعنی 14 اور 15 مئی 2008ء کو ہوا۔
”آسماں ان کی لحد پر شبنم افشانی کرے“۔میری دعا ہے کہ خدا ان پر ایسی ہی شفقت اور عنایت فرمائے جیسی وہ خدا کے بندوں پر کیا کرتے تھے۔


This entry was posted in Uncategorized. Bookmark the permalink.

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s