تیری یاد

 

تیری یاد

تیری یاد
آئے جب مجھ کو
میں لوٹ آؤں گا
وہ بھیگی رات
اور بارش ہوئے
میں بھیگ جاؤں گا

فاصلے
سمٹ نہ سکے
راستے
جومٹ نہ سکے
ان فاصلوں کو
سمٹنا ہے
ان راستوں پہ چلنا ہے

یہ دل کی بات
کوئی جانے نہ جانے
میں کہہ جاؤں گا
وہ تیرے ساتھ
گزارے لمحے
نہ بھول پاؤں گا

جو سپنے
سجائے مل کے
خوشی کے پل
بیتائے مل کے
کیا پا یا میں نے
کیا کھویا
کب جاگا ہوں میں
کب سویا

تیری ہر بات
رلائے جب مجھ کو
میں کھو جاؤں گا
وہ تیری چال
ستائے جب مجھ کو
میں ڈول جاؤں گا

Source: Jal the band
This entry was posted in شاعرى. Bookmark the permalink.

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s